FAQs

حفظ القُرآن پلس

12تا 17سال کے حفاظ کرام کیلئے 4سالہ انٹی گرییٹیڈ کورس ، الحمد اﷲ ملک بھر کے 12مراکز میں پیش ہے ، اس کورسس کے ذریعہ حفاظ طلبہ ڈاکٹر انجینئر، مینجمنٹ گریجویٹ ، اور دیگر کورسیس میں مسابقتی امتحاناتJEE,IIT,NEETکے ذریعہ داخلہ لے سکتے ہیں۔

اکثر پوچھے جانے والے سوالات(FAQs)

سوال نمبر1:حفظ القُرآن پلس کیا ہے ؟
جواب: قُرآنِ مجید کے مکمل حافظ طلباء جو عصری تعلیم سے بالکل ہی نا بلد ہیں،اُن کو عصری تعلیم سے آراستہ کیا جاتا ہے اُس کورس کو حفظ القُرآن پلس کہتے ہیں ۔
سوال نمبر2:یہ کورس کتنے سال سے چل رہا ہے؟
جواب:الحمد ﷲ یہ کورس پانچ سالوں سے کامیابی کے ساتھ شاہین ادارہ جات،بیدر سنٹرمیں چل رہا ہے
سوال نمبر3: حفظ کے ساتھ اور کوئی قابلیت ضروری ہے ؟
جواب :صرف اور صر ف حافظ ہونا کافی ہے اور صرف حفظ کا ہی ٹسٹ لیا جائیگا، حفاظ کو بنیاد سے پڑھاتے ہوئے انشااﷲ 2سال کے اندر جماعت دہم پاس کیاجاتاہے
سوال نمبر4:کتنی عمر کے حفاظ کو حفظ اُلقُرآن پلس میں داخلہ ملے گا؟
جواب:12تا17سال کی عمر کے حفاظ داخلہ لے سکتے ہیں ۔
سوال نمبر5:کتنے سال کا کورس ہے؟
جواب:4سالہ اینٹی گریٹیڈ کورس چار مرحلوں پر مشتمل ہے ‘پہلا مرحلہ:فاؤنڈیشن کورس (6ماہ)‘دوسرا مرحلہ بریج
کورس(6ماہ)‘تیسرا مرحلہ جماعت دہم ‘چوتھا مرحلہ پی یو سائنس
سوال نمبر6:یہ کورس مع قیام و طعام کے ہے؟
جواب: جی ہاں
سوال نمبر7:فیس کتنی ہے ؟
جواب: بیدر سنٹر میں مع قیام و طعام کے ساتھ75 ہزار روپیے ہے ‘مگرخصوصی طور پر رعایت کرتے ہوئے حفاظ طلباء کیلئے 36ہزار روپیے سالانہ مقرر کی گئی ہے ۔اور دیگر مراکز پر مختلف فیس ہے ربطہ فرماکر تفصیلات حاصل کریں ۔ لیکن غریب و مستحق حفاظ کرام کیلئے تمام مراکز میں 100%تک فیس میں ریایت کی گنجائش ہے
سوال نمبر 8: اس کورس میں کتنے طلبہ داخلہ لے سکتے ہیں
جواب : انشاء اﷲ تمام درخواست گزار کو داخلہ دینے کی گنجائش نکل آئیگی ۔
سوال نمبر 9: یہ کورس کونسے مقامات پر چلایا جارہاہے
جواب : یہ کورس شاہین اداراہ جات بیدر کے علاوہ ملک بھر میں 10 مراکز میں چلایا جارہاہے جن کے تفصیلی پتہ مندرجہ ذیل ہیں
سوال نمبر10:شاہین ادارہ جات ہندوستان میں کہاں واقع ہے؟
جواب:شاہین ادارہ جات ہندوستان کی جنوبی ریاست کرناٹک کے ضلع بیدرمیں واقع ہے۔
سوال نمبر11:بیدر ہندوستان کے کس بڑے شہر کے قریب ہے؟
جواب:بیدر شہر حیدرآباد و سکندرآبادکے قریب واقع ہے ‘جہاں سے بس اور ٹرین کے سفر کی سہولت ہے۔
سوال نمبر12:حیدرآباد سے بیدر شہر کتنے کیلومیٹر کے فاصلہ پر ہے ؟
جواب:حیدرآباد شہر سے بیدر شہر کا فاصلہ130کیلو میٹر ہے۔
سوال نمبر13:بیدر شہر کی آب و ہوا کیسی ہے ؟
جواب :بیدر شہر کی آب و ہوا طبعی و جغرافیائی اعتبار سے بہت ہی بہترہے ۔
سوال نمبر14:اس کورس کو مکمل کرنے کے بعد طلباء کی آئندہ تعلیمی کارکردگی کے نتائج کیسے آئے؟
جواب : میڈیکل‘ انجینئرنگ‘منیجمنٹ گریجویٹ‘و دیگر کورسس باآسانی کرسکتے ہیں ‘ اس کے علاوہ ریاستی و مرکزی سطح کے مسابقتی امتحانات میں حصہ لے
سکتے ہیں ۔ اس کورس سے فارغ التحصیل طلباء ڈاکٹر ‘انجینئر ‘و دیگر شعبہ جات میں کامیابی ساتھ زیر تعلیم ہیں ۔
سوال نمبر15:اس کورس کے مکمل ہونے کے بعد اس کا حاصل کیا ہوگا؟
جواب:ایک بہترین حافظ ایک بہترین ڈاکٹر بھی ہو ‘ایک بہترین عالمِ دین ایک بہترین انجینئر بھی‘اس مقصد کو حاصل کرنے کیلئے یہ ایک پیش رفت ہے ‘اور ماضی میں علماء حفاظ سائنسدان ‘تاجر وغیرہ وغیرہ ہوا کرتے تھے۔
سوال نمبر16:بغیر کسی بنیادی عصری تعلیم کے کیا یہ سب کچھ ممکن ہے؟
جواب: جی ہاں الحمد اللہ یہ ممکن ہے کیونکہ کوئی لڑکا حافظ ہے تو یہ طے شدہ بات ہے کہ وہ ذہین اور حافظ ہے تو یقینی طورپر وہ محنتی بھی ہے۔اور ان میں اکثریت مستحق بھی ہوتے ہیں اس لئے یہ بہت ممکن ہے کہ وہ ایک سے دو ہی سال کے اندر اندر جماعت دہم میں پڑھنے کے قابل ہوجاتے ہیں ۔
سوال نمبر17:اس کورس میں داخلہ کا طریقہ کار کیا ہوگا ۔
جواب : داخلہ کا طریقہ کار یہ ہے کہ حفاظ کرام کو فارم بھر کے اپنی سہولت (پسند)کے مرکز پر داخل کرنا ہوگا،یا Online فارم جو ویب سائیٹ پر دیا گیاہے
پرُ کرناہے ۔متعلقہ مرکز کے ذمہ دار آپ سے ربط کرتے ہوئے رہنمائی فرمائیں گے ۔
سوال نمبر18:الحمداللہ یہ ایک منفرد پروگرام ہے اس پروگرام کو کامیاب بنانے کیلئے ہم کیا تعاون ہوسکتا ہے ؟
جواب:علماء کرام کی خواہش ہے کہ اس پروگرام کو دنیا کے کونے کونے میں پھیلادو ‘یقیناًآپ جیسے فکر مند حضرات کے تعاون سے یہ ممکن ہے ‘ اب مساجد میں خطیب حضرات نمازِ جمعہ کے موقع پر اس کا اعلان کرسکتے ہیں اور دینی مدارس کے ذمہ داروں اور حفاظ اس کورس سے متعلق تعاون کرسکتے ہیں ۔
ایسے نئے نئے مراکز کو قائم کرنے کے خواہشمند حضرات ہم سے راست ربطہ کریں یا پھر ایک مرتبہ بیدر شہر میں شاہین ادارہ جات مشاہد ے کے لئے تشریف لائیں
شادی بیاہ میں بیجاہ رسومات سے پر ہیز کرتے ہوئے اور ایسے افطار پارٹی جہاں پر غریبوں اور یتیموں سے کنارہ کشی کی جاتی ہے اُس سے پرہیز کرتے ہوئے حفاظ یتیم اور جو طالب علم اپنی پڑھائی چھوڑ چکے ہیں اُن کی رہبری کرتے ہوئے تعاون کریں تو یقیناًایک بڑی تبدیلی لا سکتے ہیں
مزید تفصیلات کیلئے ہماری ویب سائیٹ سے حاصل کریں یا ڈی ڈی چندناکا ڈاکٹر عبدالقدیر صاحب کا انٹرویو جو یو ٹیوب پر موجود ہے ملاحظہ پرمائیں
نوٹ : بیدر مرکز پر سال بھر داخلے لئے جائینگے ۔

 


FAQs For Hifzul Quran Plus

Q1. What is Hifzul Quran Plus?
A: Those students who have completely memorized the Qur’an, but are totally illiterate to modern education, are taught modern education.

Q2. For how many years, this course is in existence?
A: All praises be to Allah, the course is successfully being run in Shaheen Institution, Bidar center since five years.

Q3. What else is required apart from hifz?
A: Only Hifz is required, and only hifz test will be taken.  Huffaz will be taught basics, and InShaaAllah in two years class 10th will be completed.

Q4. What is the age limit for the course?
A: Huffaz from age 12 to 17 are qualified.

Q5. What is the course duration?
A: It is a 4-year integrated course, which consists four phases,

  1. Foundation Course (6 months)
  2. Bridge Course (6 months)
  3. 10th Class
  4. PU Science

Q6. Does this course have accommodation and food facility?
A: Yes.

Q7. What is the fee?
A: In Bidar Center with food and accommodation is 75,000 INR, but with special privileges for huffaz students 36,000 INR annually has been fixed.  Fee structure varies center-wise, please contact and get the details.  For poor and needy students, 100% fees concession will be given in all centers.

Q8. How many students can enroll in this course?
A: Insha’Allah, all applicants will get an opportunity.

Q9: In how many centers, this course is being run?
A: Apart from Shaheen Bidar Center, this course is being run in 12 different centers across India.

Q10: Where Shaheen Institution is located in India?
A: Shaheen Institution is located in South Karnataka.

Q11: Which famous Indian city is close to Bidar?
A: Bidar city is nearest to Hyderabad & Secunderabad.  Bus and train facility is easily available.

Q12: What is the distance between Bidar & Hyderabad?
A: From Hyderabad city to Bidar, it is 130 km.

Q13: How is Bidar city’s climate?
A: Geographically & health-wise, Bidar city’s climate is good.

Q14: After completing this course, what next?
A: Students will be easily able to get an admission into MBBS, BE, MBA, & etc.  Apart from this, students can also compete in Center and state-level exams.

Q15.What community can get from this course?
A: How nice it would be that we have a hufiz who is a doctor, an engineer who is an Islamic Scholar.  In the past, Islamic scholars used to be scientist & business man.

Q16. Is it possible, without a basic modern education?
A:  Alhamdulillah, Yes it is possible.  This is basic that if a person has memorized Quran, he has good memory power, and it is definite that he is also a hard-worker.  Majority of huffaz are poor and needy, so this is a fact that in one to two years, they will be able to study 10th.

Q17.  What is the procedure to get enrollment into this course?
Q: The admission procedure is that the hafiz either needs to fill in the offline form, and submit to the nearest center OR they can fill in the online form in the website.  Concerned persons from the center will contact and guide you.

Q18. Alhamdulillah, it is a unique program, and to make it successful, how can we contribute?
A:  It is a wish of Islamic Scholars that this program should spread globally; definitely this is possible with your efforts and contribution.  In masajids, khatibs can announce after namaz-e-jumah.  Management of Islamic Schools can huffaz can help in spreading it.  If someone wishes to establish these kinds of centers, please contact us directly, otherwise please visit Shaheen Bidar Center once.

By avoiding unnecessary traditions in marriages, and iftar parties where poors are not invited, please help these huffaz, orphans, and drop-out students by guiding them and helping them financially.

For further details please visit our website or please check out Dr. Abdul Qadeer’s DD Chandana interview, which can be found on YouTube.

Note:  Admission are open throughout the year in Bidar Center.